سہواگ کو ’آرام‘ دے دیا گیا، ایشیا کپ کے لیے بھارتی دستے کا اعلان

ایشیا کپ میں اعزاز کے دفاع کے لیے بھارت نے اپنے دستے کا اعلان کر دیا ہے جس سے وریندر سہواگ 'آرام' کے بہانے سے باہر کر دیے گئے ہیں۔

11 سے 22 مارچ تک بنگلہ دیش میں ہونے والے اس براعظمی اعزاز کے لیے اعلان کردہ بھارتی دستے کی قیادت بدستور مہندر سنگھ دھونی کے پاس رہے گی اور یوں سلیکشن کمیٹی کے تازہ اعلان نے دھونی کے حوالے سے اُڑنے تمام تر افواہوں پر پانی پھیر دیا ہے جبکہ حیران کن طور پر نائب کپتان کے فرائض ویراٹ کوہلی کو سونپ دیے گئے ہیں جو پہلے گوتم گمبھیر کے پاس تھے۔

سہواگ کو ٹیم فزیو کے مشورے کے باعث آرام کا موقع دیا گیا ہے، باہر نہیں نکالا گیا: کرش سری کانتھ (تصویر: AP)

سہواگ کو ٹیم فزیو کے مشورے کے باعث آرام کا موقع دیا گیا ہے، باہر نہیں نکالا گیا: کرش سری کانتھ (تصویر: AP)

بظاہر تو یہی نظر آتا ہے کہ سہواگ کو باہر نکالا گیا ہے لیکن اُن کی طرح ناقص فارم سے گزرنے والے سچن رمیش تنڈولکر کو ٹیم میں برقرار رکھا گیا ہے جو اس وقت 100 ویں بین الاقوامی سنچری کی تلاش میں سرگرداں ہیں۔ گزشتہ سال عالمی کپ جیتنے کے بعد سے وہ منتخب ایک روزہ مقابلے ہی کھیل رہے ہیں اور آسٹریلیا میں جاری کامن ویلتھ بینک سیریز کی سات اننگز میں بھی صرف 143 رنز ہی بنا پائے ہیں۔ چیئرمین سلیکٹرز کرش سری کانتھ کا بھی کہنا ہے کہ ”کسی کو ٹیم سے خارج نہیں کیا گیا ٹیم فزیو کے مشورے کے عین مطابق سہواگ، ظہیر خان اور اُمیش یادیو کو آرام دیا گیا ہے۔“ آل راؤنڈر یوسف پٹھان اور تیز گیند باز اشوک ڈِنڈا کو ٹیم میں شامل کیا گیا ہے۔ اشوک ڈنڈا کو رنجی ٹرافی میں عمدہ کارکردگی کے باعث ایک اور موقع دیا گیا ہے۔ انہوں نے آخری مرتبہ ایشیا کپ 2010ء میں ملک کی نمائندگی کی تھی۔

گھٹنے کی تکلیف سے صحت یابی پانے والے یوسف پٹھان دورۂ ویسٹ انڈیز کے بعد پہلی بار بھارت کی نمائندگی کر سکتے ہیں تاہم آل راؤنڈر کی جگہ پانے کےلیے ان کا مقابلہ رویندر جاڈیجا سے ہے، جنہوں نے انڈین پریمیئر لیگ کے حالیہ سیزن کے لیے 2 ملین ڈالرز میں فروخت ہونے کے باعث کافی شہرت کمائی ہے، لیکن اُن کی حالیہ کارکردگی اس قابل نہیں ہے، پھر بھی یہ دیکھنا دلچسپی سےخالی نہ ہوگا کہ ان دونوں میں سے کون حتمی الیون میں جگہ پاتا ہے۔

اعلان کردہ بھارتی دستہ ان کھلاڑیوں پر مشتمل ہے:

مہندر سنگھ دھونی (کپتان)، اشوک ڈِنڈا، پروین کمار، راہل شرما، روہت شرما، روی چندر آشوِن، رویندر جاڈیجا ، سچن تنڈولکر، سریش رینا، عرفان پٹھان، گوتم گمبھیر، منوج تیواری، وِنے کمار، ویراٹ کوہلی اور یوسف پٹھان۔

Facebook Comments