آئی سی سی ایوارڈز 2012ء کے نامزدگان کا اعلان، سعید اجمل بھی شامل

دنیائے کرکٹ کے بہترین اسپنر سعید اجمل بین الاقوامی کرکٹ کونسل کے ”آئی سی سی ایوارڈز 2012ء“ میں تین زمروں میں نامزد ہوئے ہیں جبکہ جنوبی افریقہ کے ہاشم آملہ، آسٹریلیا کے کپتان مائیکل کلارک، سری لنکا کے کمار سنگاکارا اور انگلستان کے ایلسٹر کک سال کے بہترین کھلاڑی میں پاکستانی اسپنر کے مدمقابل ہوں گے۔

سعید اجمل اس وقت دنیا کے نمبر ایک اسپنر ہیں (تصویر: Getty Images)

سعید اجمل اس وقت دنیا کے نمبر ایک اسپنر ہیں (تصویر: Getty Images)

سوموار کو آئی سی سی کی جانب سے کرک نامہ کو موصول ہونے والے اعلامیہ کے مطابق یہ تمام کھلاڑی سال کے بہترین کھلاڑی کے ایوارڈ سر گارفیلڈ سوبرز کے لیے نامزد کیے گئے ہیں۔ ان پانچ مرد کھلاڑیوں کے علاوہ ویسٹ انڈیز کی خاتون اسٹیفنی ٹیلر بھی اس اعزاز کی امیدوار ہیں اور یوں سال کے بہترین کھلاڑی کے لیے نامزد ہونے والی پہلی خاتون کرکٹر بن گئی ہیں۔ بین الاقوامی کرکٹ کونسل نے اس کے علاوہ سال کے بہترین ٹیسٹ اور ایک روزہ کھلاڑی کے لیے بھی طویل فہرستیں جاری کی ہیں۔

آئی سی سی ایوارڈز کی تقریب ورلڈ ٹی ٹوئنٹی 2012ء کے آغاز سے قبل 15 ستمبر کو کولمبو میں منعقد ہوگی جس میں 11 انفرادی انعامات کے علاوہ سال کی ٹیسٹ اور ایک روزہ ٹیموں کا اعلان بھی کیا جائے گا۔ علاوہ ازیں مسلسل تیسرے سال عوام کے پسندیدہ کھلاڑی کے لیے پیپلز چوائس ایوارڈ بھی رکھا گیا ہے۔ یہ اعزاز پانچ نامزد کھلاڑیوں میں سے اُس کو دیا جائے گا جسے عوام کی بڑی تعداد آن لائن ووٹ کرے گی۔ یہ پانچ کھلاڑی کمار سنگاکارا، سچن تنڈولکر، ویرنن فلینڈر، ژاک کیلس اور جیمز اینڈرسن ہیں جنہیں آئی سی سی کے سلیکشن پینل نے منتخب کیا تھا اور رواں ماہ کے اوائل سے اُن کے حق میں ووٹنگ جاری ہے۔ کرکٹ شائقین فیس بک پر آئی سی سی کے صفحے  پر 31 اگست تک اپنے پسندیدہ کھلاڑی کو ووٹ دے سکتے ہیں۔

ایوارڈز کے لیے نامزد طویل فہرست میں آئی سی سی کے پانچ رکنی سلیکشن پینل نے مرتب کی ہیں جن کی قیادت ویسٹ انڈیز کے سابق کپتان اور آئی سی سی کرکٹ کمیٹی کے موجودہ چیئرمین کلائیو لائیڈ کر رہے ہیں۔ پینل میں سابق بین الاقوامی کھلاڑی انگلستان کی کلیئر کونر، آسٹریلیا کے ٹام موڈی، ویسٹ انڈیز کے کارل ہوپر اور سری لنکا کے مارون اتاپتو شامل ہیں۔

رواں سال بھی بہترین ٹی ٹوئنٹی کارکردگی کے لیے اس سال 11 کھلاڑیوں کو نامزد کیا گیا ہے جن میں انگلستان، ویسٹ انڈیز، جنوبی افریقہ، نیوزی لینڈ، سری لنکا اور پاکستان کے کھلاڑی شامل ہیں۔

اسپرٹ آف کرکٹ ایوارڈ کی طویل فہرست آئی سی سی کے امپائروں اور ریفریز کے ایلیٹ پینل نے مرتب کی ہے جبکہ یہ اعزاز ان امپائروں اور ریفریز کے علاوہ 10 مکمل رکن ممالک کے کپتانوں کی ووٹوں کی بنیاد پر دیا جائے گا۔ رواں سال اس اعزاز کے نامزدگان میں جنوبی افریقہ کے ژاک کیلس اور ابراہم ڈی ولیئرز، پاکستان کے محمد حفیظ، ویسٹ انڈیز کے کیرون پولارڈ اور نیوزی لینڈ کے ڈینیل ویٹوری شامل ہیں۔

دوسری جانب سال کے بہترین امپائر کے لیے ڈیوڈ شیفرڈ ٹرافی بھی ہوگی جو دنیا بھر کے کپتانوں اور میچ ریفریز کے ووٹوں اور امپائروں کی کارکردگی کی بنیاد پر جیتنے والے فرد کو دی جائے گی۔

علاوہ ازیں رواں سال سال کے بہترین ابھرتے ہوئے کرکٹر کے لیے بھی ایک اعزاز بھی ہوگا۔ اس اعزاز کے لیے 26 سال سے کم عمر ہونا اور پانچ ٹیسٹ اور/یا 10 ایک روزہ یا 5 ٹی ٹوئنٹی سے کم مقابلے کھیلنا شرط ہے۔

یہ مجموعی طور پر نویں آئی سی سی ایوارڈز ہوں گے جو کولمبو، سری لنکا میں منعقد ہوں گے۔ پہلی بار 2004ء میں لندن میں ہونے والے یہ اعزازات 2005ء میں سڈنی، 2006ء میں ممبئی، 2007ء میں جوہانسبرگ، 2008ء میں دبئی، 2009ء میں جوہانسبرگ، 2010ء میں بنگلور اور 2011ء میں لندن میں منعقد ہوئے۔

آئی سی سی ایوارڈز 2012ء نامزدگان

سال کا بہترین کرکٹر (سر گارفیلڈ سوبرز ٹرافی)

سعید اجمل پاکستان
ہاشم آملہ جنوبی افریقہ
اسٹورٹ براڈ انگلستان
مائیکل کلارک آسٹریلیا
ایلسٹر کک انگلستان
ویراٹ کوہلی بھارت
ویرنن فلینڈر جنوبی افریقہ
کمار سنگاکارا سری لنکا
اسٹیفنی ٹیلر ویسٹ انڈیز

سال کا بہترین ٹیسٹ کرکٹر

سعید اجمل پاکستان
ہاشم آملہ جنوبی افریقہ
اسٹورٹ براڈ انگلستان
شیونرائن چندرپال ویسٹ انڈیز
مائیکل کلارک آسٹریلیا
ایلسٹر کک انگلستان
ژاک کیلس جنوبی افریقہ
ویرنن فلینڈر جنوبی افریقہ
میٹ پرائیر انگلستان
مارلون سیموئلز ویسٹ انڈیز
کمار سنگاکارا سری لنکا
ڈیل اسٹین جنوبی افریقہ
ابراہم ڈی ولیئرز جنوبی افریقہ

سال کے بہترین مرد ون ڈے کھلاڑی

شاہد آفریدی پاکستان
سعید اجمل پاکستان
مائیکل کلارک آسٹریلیا
ایلسٹر کک انگلستان
مہندر سنگھ دھونی بھارت
اسٹیون فن انگلستان
گوتم گمبھیر بھارت
شکیب الحسن بنگلہ دیش
ویراٹ کوہلی بھارت
لاستھ مالنگا سری لنکا
برینڈن میک کولم نیوزی لینڈ
مورنے مورکل جنوبی افریقہ
سنیل نرائن ویسٹ انڈیز
کمار سنگاکارا سری لنکا
برینڈن ٹیلر زمبابوے
شین واٹسن آسٹریلیا

سال کی بہترین خاتون ون ڈے کھلاڑی

جیس کیمرون آسٹریلیا
شینل ڈیلے ویسٹ انڈیز
لیڈیا گرینوے انگلستان
انیسہ محمد ویسٹ انڈیز
مٹھالی راج بھارت
سارہ ٹیلر انگلستان
اسٹیفنی ٹیلر ویسٹ انڈیز

سال کی بہترین خاتون ٹی ٹوئنٹی کھلاڑی

جیس کیمرون آسٹریلیا
شینل ڈیلے ویسٹ انڈیز
الیسا ہیلی آسٹریلیا
انیسہ محمد ویسٹ انڈیز
مٹھالی راج بھارت
لیزا ستھالیکر آسٹریلیا
سارہ ٹیلر انگلستان
اسٹیفنی ٹیلر ویسٹ انڈیز

سال کا بہترین ابھرتا ہوا کھلاڑی

ٹرینٹ بولٹ نیوزی لینڈ
ڈوگ بریسویل نیوزی لینڈ
دنیش چندیمال سری لنکا
پیٹ کمنز آسٹریلیا
ناصر حسین بنگلہ دیش
جنید خان پاکستان
ناتھن لیون آسٹریلیا
ٹینو ماوویو زمبابوے
سنیل نرائن ویسٹ انڈیز
جیمز پیٹن سن آسٹریلیا
لاہیرو تھریمانے سری لنکا
میتھیو ویڈ آسٹریلیا

سال کا بہترین ایسوسی ایٹ اور ایفیلیٹ کھلاڑی

شامین انور متحدہ عرب امارات
پیٹر بورن نیدرلینڈز
جارج ڈوکریل آئرلینڈ
ٹرینٹ جانسٹن آئرلینڈ
ایڈ جوائس آئرلینڈ
جان مونی آئرلینڈ
کیون اوبرائن آئرلینڈ
ہیرل پٹیل کینیڈا
پال اسٹرلنگ آئرلینڈ
دولت زدران افغانستان

سال کی بہترین ٹی ٹوئنٹی کارکردگی

روی بوپارا انگلستان 3.4-0-10-4 بمقابلہ ویسٹ انڈیز اوول 23 ستمبر 2011ء
تلکارتنے دلشان سری لنکا 104* بمقابلہ آسٹریلیا پالی کیلے 6 اگست 2011ء
کرس گیل ویسٹ انڈیز 85* بمقابلہ نیوزی لینڈ لاڈرہل 30 جون 2012ء
مارٹن گپٹل نیوزی لینڈ 91* بمقابلہ زمبابوے آکلینڈ 11 فروری 2012ء
محمد حفیظ پاکستان 2.2-0-10-4 بمقابلہ زمبابوے ہرارے 16 ستمبر 2011ء
ایلکس ہیلز انگلستان 99 بمقابلہ ویسٹ انڈیز ناٹنگھم 24 جون 2012ء
رچرڈ لیوی جنوبی افریقہ 117* بمقابلہ نیوزی لینڈ آکلینڈ 22 فروری 2012ء
برینڈن میک کولم نیوزی لینڈ 81* بمقابلہ زمبابوے ہرارے 15 اکتوبر 2011ء
اجنتھا مینڈس سری لنکا 4-1-16-6 بمقابلہ آسٹریلیا پالی کیلے 8 اگست 2011ء
سنیل نرائن ویسٹ انڈیز 4-0-12-4 بمقابلہ نیوزی لینڈ لاڈرہل یکم جولائی 2012ء
الیاس سنی بنگلہ دیش 4-1-13-5 بمقابلہ آئرلینڈ بیلفاسٹ 18 جولائی 2012ء

اسپرٹ آف کرکٹ ایوارڈ

محمد حفیظ پاکستان
ژاک کیلس جنوبی افریقہ
کیرون پولارڈ ویسٹ انڈیز
ڈینیل ویٹوری نیوزی لینڈ
ابراہم ڈی ولیئرز جنوبی افریقہ

سال کے بہترین امپائر (ڈیوڈ شیفرڈ ٹرافی)

بلی باؤڈن
علیم ڈار
اسٹیو ڈيوس
کمار دھرماسینا
بلی ڈاکٹروو
میریس ایرسمس
این گولڈ
ٹونی ہل
رچرڈ کیٹل بورو
نائجل لونگ
اسد رؤف
سائمن ٹوفل
روڈ ٹکر

پیپلز چوائس ایوارڈ

جیمز اینڈرسن انگلستان
ژاک کیلس جنوبی افریقہ
ویرنن فلینڈر جنوبی افریقہ
کمار سنگاکارا سری لنکا
سچن تنڈولکر بھارت

Facebook Comments