آ رہا ہے پاکستان ۔۔۔۔۔ آنے دو!!!

"یہ کپ کہیں نہیں جائے گا"، "انگریزوں کی بجا دی، بین!" کے بعد بھارتی ٹیلی وژن چینلوں کا یہ نیا شاہکار 'آنے دو!' پاک بھارت سیریز کے لیے بھارتی ٹیلی وژن چینل کے بنائے گئے اشتہارات میں کپتان مہندر سنگھ دھونی سمیت چند دیگر کھلاڑی پاکستان کو دھمکاتے دکھائے گئے "آنے دو!"۔ بہرحال، 'پاکستان آیا، اُس نے دیکھا اور فتح کر لیا'۔ ابھی سیریز کا ایک مقابلہ باقی ہے، لیکن پاکستان ایک روزہ سیریز 2-0 سے اپنے نام کر چکا ہے، کئی لوگوں کی نظروں میں تو حیران کن فتح۔

بے جا توقعات اور حریف کو خاطر ہی میں نہ لانا بھارتی کرکٹ کے لیے سخت نقصان دہ ہوگا (تصویر: ICC)

بے جا توقعات اور حریف کو خاطر ہی میں نہ لانا بھارتی کرکٹ کے لیے سخت نقصان دہ ہوگا (تصویر: ICC)

پاکستان کے لیے یہ توقعات سے کہیں زیادہ حوصلہ افزا جیت تھی۔ گزشتہ پورے سال ایک روزہ کرکٹ میں جدوجہد کرنے کے بعد روایتی حریف کے خلاف اُسی کی سرزمین پر اتنی بڑی فتح حاصل کرنا، 2013ء میں آنےوالے مشکل مراحل میں پاکستان کے حوصلوں کو بلند کرے گا۔ ان فتوحات کا ملک میں جشن بھی خوب منایا گیا، پاکستان کے مختلف شہروں میں ڈھول کی تاپ پر رقص بھی ہوئی، مٹھائیاں بھی بٹیں اور ہاں! ہوائی فائرنگ بھی خوب ہوئی۔

بہرحال، بھارت ضرور ورلڈ چیمپئن ہوگا، اس کے بعد دنیا کی مہنگی اور نظروں کو خیرہ کر دینے والی لیگ بھی ہوگی لیکن اس سیریز میں بہرحال ثابت ہوا کہ پاکستان بھارت سے بہتر ٹیم ہے۔

کیونکہ بھارت میں کسی بھی سیریز سے پہلے ایسی باتیں کی جاتی ہیں، اس لیے شکست کی صورت میں ذلت کے امکانات بھی اسی قدر زیادہ ہوتے ہیں۔ جب "یہ کپ کہیں نہیں جائے گا" والی ٹیم ورلڈ ٹی ٹوئنٹی کے پہلے راؤنڈ میں باہر ہو جائے، جب انگریزوں کے مقابلے میں اپنی ہی بج جائے اور جس کو بلّے دکھا کر بولا جائے آنے دو! وہ آ کر چاروں شانے چت کر دے، تو بلاشبہ چوٹ بہت سخت لگتی ہوگی۔

اس لیے ضروری ہے کہ بجائے بے جا توقعات وابستہ کرنے کے کرکٹ کو کرکٹ ہی سمجھا جائے، اسی میں شائقین کرکٹ کی بھی عافیت اور کھلاڑیوں کا بھی بھلا۔ دوسری ٹیم کو کسی خاطر ہی میں نہ لانا، بجائے خود بھارت کے لیے نقصان دہ ہے اور شکست کے بعد خفت کا باعث بھی۔

اب گو کہ ٹی ٹوئنٹی سیریز برابر کھیلنے اور ون ڈے سیریز ہارنے کے بعد بھارت کی قومی کرکٹ ٹیم سخت تنقید کی زد میں ہے، لیکن آنے دو! والا اشتہار اب بھی ٹیلی وژن پر جاری ہے۔ اللہ بھارتی بلے بازوں کے ساتھ ساتھ ان ٹی وی والوں کو بھی عقل دے۔

Facebook Comments