[ریکارڈز] پہلے ون ڈے میں سنچری

آسٹریلیا کے فلپ ہیوز نے اپنے کیریئر کے پہلے ہی ایک روزہ مقابلے میں سنچری اسکور کر کے تاریخ میں اپنا نام امر کر لیا۔ وہ آسٹریلیا کے پہلے بلے باز ہیں جنہیں ون ڈے ڈیبیو پر سنچری اسکور کرنے کا اعزاز حاصل ہوا جبکہ ان سے قبل 7 بلے باز ایسے ہیں جنہوں نے یہ کارنامہ انجام دیا۔

ٹیسٹ ڈیبیو کا آغاز صفر سے کرنے والے فلپ ہیوز نے ایک روزہ کیریئر کا آغاز سنچری سے کیا (تصویر: Getty Images)

24 سالہ فلپ ہیوز گو کہ آسٹریلیا کا ٹیسٹ دستے کا مستقل حصہ ہیں اور 2009ء سے اب تک 20 ٹیسٹ میچز میں ملک کی نمائندگی کر چکے ہیں، لیکن انہیں ایک روزہ طرز کی کرکٹ کے لیے موزوں نہیں سمجھا جاتا۔ اب جبکہ آسٹریلیا مائیکل کلارک، شین واٹسن، ڈیوڈ وارنر اور مائیکل ہسی جیسے کھلاڑیوں کے بغیر ایک روزہ سیریز کھیل رہا ہے، فلپ ہیوز کو موقع دیا گیا کہ وہ سری لنکا کے خلاف ایک روزہ سیريز میں اوپننگ کا خلا پورا کریں اور انہوں نے پہلے ہی میچ میں خود کو ثابت کر دکھایا۔ انہوں نے 129 گیندوں پر 14 چوکوں کی مدد سے 112 رنز کی قیمتی اننگز کھیلی۔ تیسری وکٹ پر کپتان جارج بیلی کے ساتھ ان کی 140 رنز کی ساجھے داری نے میچ کے فیصلے میں کلیدی کردار ادا کیا۔

یاد رہے کہ فلپ ہیوز سری لنکا کے خلاف حالیہ ٹیسٹ سیریز میں دو مرتبہ سنچری سے محروم رہ گئے تھے۔ وہ ہوبارٹ ٹیسٹ کی پہلی اننگز میں 86 اور سڈنی میں کھیلے گئے تیسرے ٹیسٹ میں 87 رنز بنا کر آؤٹ ہو گئے تھے لیکن تمام کسر انہوں نے ملبورن کرکٹ گراؤنڈ میں کھیلے گئے پہلے ون ڈے میں نکال لی۔

ایک روزہ کرکٹ کی تاریخ میں پہلی سنچری انگلستان کے عظیم کھلاڑی ڈینس ایمس نے اگست 1972ء میں بنائی تھی جب انہوں نے اولڈ ٹریفرڈ، مانچسٹر میں آسٹریلیا کے خلاف 134 گیندوں پر 103 رنز اسکور کیے۔ یہ ایک روزہ کرکٹ کی تاریخ کا محض دوسرا مقابلہ تھا، جس میں ایمس کی سنچری انگلستان کو 6 وکٹوں سے فتح یاب کر گئی۔

پاکستان کی جانب سے یہ اعزاز صرف سلیم الٰہی کو حاصل ہے۔ انہوں نے ستمبر 1995ء میں گوجرانوالہ میں کھیلے گئے ایک روزہ مقابلے میں سری لنکا کے خلاف ناقابل شکست 102 رنز بنائے تھے۔

ہم قارئین کی دلچسپی کے لیے کچھ اعدادوشمار اس ٹیبل میں پیش کر رہے ہیں، امید ہے معلومات میں اضافے کا باعث بنیں گے:

نام ملک رنز گیندیں چوکے چھکے بمقابلہ بمقام بتاریخ
ڈینس ایمس انگلستان 103 134 9 0 آسٹریلیا مانچسٹر 24 اگست 1972ء
ڈیسمنڈ ہینز ویسٹ انڈیز 148 136 16 2 آسٹریلیا سینٹ جانز 22 فروری 1978ء
اینڈی فلاور زمبابوے 115* 152 8 1 سری لنکا نیو پلائیمتھ 23 فروری 1992ء
سلیم الہی پاکستان 102* 133 7 1 سری لنکا گوجرانوالہ 29 ستمبر 1995ء
مارٹن گپٹل نیوزی لینڈ 122* 135 8 2 ویسٹ انڈیز آکلینڈ 10 جنوری 2009ء
کولن انگرام جنوبی افریقہ 124 126 8 2 زمبابوے بلوم فاؤنٹین 15 اکتوبر 2010ء
راب نکول نیوزی لینڈ 108* 131 11 0 زمبابوے ہرارے 20 اکتوبر 2011ء
فلپ ہیوز آسٹریلیا 112 129 14 0 سری لنکا ملبورن 11 جنوری 2013ء

Facebook Comments