[ریکارڈز] ایک مقابلے میں سب سے زیادہ چھکے

کمبھ کے میلے کے بعد بھارت کا دوسرا سب سے بڑا میلہ یعنی 'رنز میلہ' اپنے اختتام کو پہنچا۔ 7 ایک روزہ مقابلوں میں صرف 5 مقابلے ہی مکمل ہو پائے جس میں رنزوں کے انبار لگ گئے۔ کئی ریکارڈ ٹوٹے اور آخری مقابلے میں بھی دھواں دار بلے بازی کا مظاہرہ دیکھنے میں آیا۔ خاص طور پر روہیت شرما کی ڈبل سنچری اننگز نے ہندوستان میں دیوالی کی خوشیوں کو دوبالا کردیا۔

روہیت شرما نے ہندوستان میں دیوالی کی خوشیوں کو دوبالا کردیا (تصویر: BCCI)

روہیت شرما نے ہندوستان میں دیوالی کی خوشیوں کو دوبالا کردیا (تصویر: BCCI)

روہیت شرما نے 158 گیندوں پر مشتمل 209 رنز کی اننگز میں ریکارڈ 16 چھکے لگائے جو آج تک دنیا کا کوئی بلے باز کسی ایک روزہ مقابلے کی واحد اننگز میں نہیں لگا سکا۔ روہیت سے قبل یہ ریکارڈ آسٹریلیا کے شین واٹسن کے پاس تھا، جو اس مقابلے میں جارحانہ موڈ میں نظر تو آئے لیکن اپنی انجری اور مقابلہ ہاتھ سے نکل جانے کے باعث بھارت کے لیے کچھ خاص خطرہ ثابت نہ ہو سکے۔

روہیت شرما نے اپنی ڈبل سنچری بھی چھکے کے ذریعے مکمل کی اور یہ چھکا ریکارڈ برابر کرنے کا چھکا تھا اور اگلی ہی گیند کو انہوں نے ایک مرتبہ پھر ڈیپ مڈوکٹ باؤنڈری سے باہر جا پھینکا۔ گو کہ وہ آخری اوور کی تیسری گیند پر آؤٹ ہوگئے لیکن ان دونوں چھکوں نے تاریخ میں ان کا نام امر کردیا ہے۔

شین واٹسن کا گزشتہ ریکارڈ 11 اپریل 2011ء کو بنگلہ دیش کے خلاف ڈھاکہ میں بنایا گیا تھا جب انہوں نے 96 گیندوں پر 185 رنز کی ناقابل شکست باری کھیلی تھی۔ کئی ریکارڈز ان کی اننگز کی زد میں آ گئے تھے لیکن کیونکہ آسٹریلیا بعد میں بیٹنگ کر رہا تھا اور بنگلہ دیش کی جانب سے دیا گیا ہدف بہت زیادہ نہیں تھا، اس لیے کئی ریکارڈز بچ گئے۔

ایک روزہ کرکٹ کی تاریخ میں صرف 11 مواقع ایسے آئے ہیں جب کسی ایک بلے باز نے 10 یا اس سے زیادہ چھکے لگائے ہوں اور کسی کھلاڑی کو ایک سے زیادہ مرتبہ یہ کارنامہ انجام دینے کا موقع نہیں ملا۔

ہم ذیل میں کسی ایک مقابلے میں 10 یا اس سے زیاد ہ چھکے لگانے والے بلے بازوں کی فہرست پیش کر رہے ہیں، امید ہے قارئین کے لیے دلچسپی کا باعث ہوگی:

ایک باری میں سب سے زیادہ چھکے

بلے باز ملک رنز گیندیں چوکے چھکے بمقابلہ بتاریخ بمقام
روہیت شرما بھارت 209 158 12 16 آسٹریلیا نومبر 2013ء بنگلور
شین واٹسن آسٹریلیا 185* 96 15 15 بنگلہ دیش اپریل 2011ء ڈھاکہ
زاویئر مارشل ویسٹ انڈیز 157* 118 11 12 کینیڈا اگست 2008ء کنگ سٹی
سنتھ جے سوریا سری لنکا 134 65 11 11 پاکستان اپریل 1996ء سنگاپور
شاہد آفریدی پاکستان 102 40 6 11 سری لنکا اکتوبر 1996ء نیروبی
مہندر سنگھ دھونی بھارت 183* 145 15 10 سری لنکا اکتوبر 2005ء جے پور
مارک باؤچر جنوبی افریقہ 147* 68 8 10 زمبابوے ستمبر 2006ء پوچفیسٹروم
میتھیو ہیڈن آسٹریلیا 181* 166 11 10 نیوزی لینڈ فروری 2007ء ہملٹن
برینڈن میک کولم نیوزی لینڈ 166 135 12 10 آئرلینڈ جولائی 2008ء ابرڈین
عبد الرزاق پاکستان 109* 72 7 10 جنوبی افریقہ اکتوبر 2010ء ابوظہبی
کیرون پولارڈ ویسٹ انڈیز 119 110 4 10 بھارت دسمبر 2011ء چنئی

Facebook Comments