تیسرا ایک روزہ: مصباح قیادت سے دستبردار، شاہد آفریدی قائم مقام

سری لنکا کے بعد آسٹریلیا کے ہاتھوں بھی ایک روزہ سیریز ہارنے کے بعد پاکستان کے کپتان مصباح الحق نے تیسرے و آخری ون ڈے مقابلے سے دستبردار ہونے کا اعلان کردیا ہے۔ اب ابوظہبی میں ہونے والے تیسرے ایک روزہ میں ان کی جگہ قیادت شاہد خان آفریدی کریں گے جنہیں پاکستان کرکٹ بورڈ نے حال ہی میں پاکستان کا ٹی ٹوئنٹی کپتان مقرر کیا تھا۔

گزشتہ سال 1373 رنز بنانے والے مصباح الحق رواں سال 22 کے اوسط سے صرف 225 رنز بنا پائے ہیں  (تصویر: Getty Images)

گزشتہ سال 1373 رنز بنانے والے مصباح الحق رواں سال 22 کے اوسط سے صرف 225 رنز بنا پائے ہیں (تصویر: Getty Images)

مصباح الیون نہ صرف اس وقت شکست کے گرداب میں پھنسی ہوئی ہے جسے مسلسل چار ون ڈے مقابلوں میں شکست ہوئی ہے بلکہ خود مصباح الحق بھی بدترین فارم میں ہیں۔ 2013ء میں رنز کے انبار لگانے والے مصباح الحق کے لیے نیا سال بہت مایوس کن ثابت ہوا۔ ایشیا کپ میں سری لنکا کے خلاف دو شکست خوردہ مقابلوں میں نصف سنچریوں کے علاوہ وہ ایک مرتبہ بھی 36 سے آگے نہیں جا سکے بلکہ 10 اننگز میں دو مرتبہ صفر کی ہزیمت کا بھی نشانہ بنے۔ سال 2014ء میں اب تک کھیلے گئے 10 ایک روزہ مقابلوں میں مصباح صرف 22.50 کے اوسط سے 225 رنز بنا سکے ہیں جو گزشتہ سال 54.92 کے اوسط سے بنائے گئے 1373 رنز کے مقابلے میں بدترین اعداد ہیں۔

رواں سال کے اوائل میں ورلڈ ٹی ٹوئنٹی 2014ء میں شکست کے بعد محمد حفیظ نے قیادت سے استعفیٰ دے دیا تھا جس کے بعد پاکستان کرکٹ بورڈ نے ٹی ٹوئنٹی کی کپتانی شاہد آفریدی کی سپرد کردی تھی۔ اب جبکہ محمد حفیظ ہاتھ کی انجری کی وجہ سے جاری سیریز سے باہر ہیں، پاکستان نے ایک مرتبہ پھر شاہد آفریدی کو قیادت سونپی ہے جو سال 2011ء کے دورۂ ویسٹ انڈیز کے بعد پہلی بار ایک روزہ میں پاکستان کی کپتانی کریں گے۔

مصباح کے اس قدم کا مقصد غالباً یہ باور کرانا ہوگا کہ مسئلہ ٹیم کے ساتھ ہے، ان کے اپنے ساتھ نہیں ہے اور شاید وہ خود اپنی فارم سے بھی خوش نہیں ہوں گے۔ اب دیکھتے ہیں کہ کل یعنی اتوار کو ابوظہبی میں ہونے والے مقابلے میں شاہد آفریدی کی قیادت میں ٹیم کیا گل کھلاتی ہے؟

Facebook Comments