[ریکارڈز] اسٹیون فن عالمی کپ میں ہیٹ ٹرک کرنے والے پہلے انگلش باؤلر

آسٹریلیا کے تاریخی میدان ملبورن میں عالمی کپ 2015ء کا پہلا مقابلہ روایتی حریف انگلستان اور آسٹریلیا کے مابین جاری ہے، جہاں آسٹریلیا نے پہلے بلے بازی کرتے ہوئے 342 رنز کا بہت بڑا مجموعہ اکٹھا کر ڈالا ہے۔ انگلستان کے گیندبازوں کی باؤلنگ اور فیلڈنگ ویسے تو مایوس کن رہی لیکن آخری اوور کی آخری تین گیندوں پر اسٹیون فن نے انگلش کھلاڑیوں اور شائقین کے چہروں پر مسکراہٹ بکھیر دی، جب وہ عالمی کپ میں ہیٹ ٹرک کرنے والے انگلستان کے پہلے باؤلر بنے۔

فن نے آخری تین گیندوں پر بریڈ ہیڈن، گلین میکس ویل اور مچل جانسن کو آؤٹ کیا اور یوں عالمی کپ کی تاریخ کے آٹھویں گیندباز بنے، جنہیں ہیٹ ٹرک کا اعزاز حاصل ہے۔ ہیڈن تھرڈ میں پر، میکس ویل لانگ آف پر جبکہ مچل جانسن مڈ آف پر کیچ دے کر فن کو اپنی وکٹیں دے گئے۔

ویسے آسٹریلیا کے بلے بازوں کے سامنے انگلش باؤلرز بھیگی بلی بنے رہے۔ اسٹیون فن نے گو کہ 5 وکٹیں حاصل کیں لیکن اس کے لیے 71 رنز دیے جو ایک روزہ کرکٹ کی مہنگی ترین پانچ وکٹوں کی کارکردگی ہے۔

اگر عالمی کپ میں ہیٹ ٹرک کی تاریخ دیکھی جائے تو بھارت کے چیتن شرما وہ پہلے گیندباز ہیں جنہوں نے 1987ء کے عالمی کپ میں نیوزی لینڈ کے خلاف کی تین گیندوں پر تین کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا تھا جبکہ آخری بار یہ کارنامہ 2011ء میں لاستھ مالنگا نے کینیا کے خلاف انجام دیا۔

ورلڈ کپ میں ہیٹ ٹرک کرنے والے گیندباز

گیندباز ملک آؤٹ ہونے والے بلے باز بمقابلہ بمقام بتاریخ
چیتن شرما  بھارت کین ردرفرڈاین اسمتھ

ایون چیٹ فیلڈ

نیوزی لینڈ ناگ پور 31 اکتوبر 1987ء
ثقلین مشتاق پاکستان ہنری اولنگاایڈم ہکل

پومی ایم بانگوا

زمبابوے اوول، لندن 11 جون 1999ء
چمندا واس سری لنکا حنان سرکارمحمد اشرفل

احسان الحق

بنگلہ دیش پیٹر میرٹزبرگ 14 فروری 2003ء
بریٹ لی آسٹریلیا کینیڈی اوٹینوبریجل پٹیل

ڈیوڈ اوبویا

کینیا ڈربن 15 مارچ 2003ء
لاستھ مالنگا سری لنکا شان پولاکاینڈریو ہال

ژاک کیلس

مکھایا این تینی

جنوبی افریقہ گیانا 28 مارچ 2007ء
کیمار روچ ویسٹ انڈیز پیٹر سیلاربرنارڈس لوٹس

برینڈ ویسڈیک

نیدرلینڈز دہلی 28 فروری 2011ء
لاستھ مالنگا سری لنکا تنمے مشراپیٹر اونگونڈو

شیم اینگوشے

کینیا کولمبو یکم مارچ 2011ء
اسٹیون فن انگلستان بریڈ ہیڈنگلین میکس ویل

مچل جانسن

آسٹریلیا ملبورن 14 فروری 2015ء

Facebook Comments