ایڈیلیڈ اوول پاکستان کے لیے ’بھوت بنگلہ‘

عالمی کپ 2015ء میں پاکستان نے جنوبی افریقہ کے مقابلے میں ایک یادگار فتح حاصل کی، لیکن اس کے باوجود اسے بقاء کی جنگ درپیش ہے۔ کل یعنی اتوار کی صبح اسے آئرلینڈ کے خلاف اپنا آخری گروپ مقابلہ کھیلنا ہے، وہی حریف کہ جس کے خلاف 8 سال قبل پاکستان کو عالمی کپ ہی میں شکست ہوئی تھی، ایسی شکست جو نہ صرف ٹیم کو عالمی اعزاز کی دوڑ سے باہر کرگئی بلکہ اس وقت کے کوچ باب وولمر تک کی جان لے گئی۔ اب ایک مرتبہ پھر عالمی کپ ہے، پاکستان ہے، آئرلینڈ ہے اور مقابلہ ایسے میدان پر ہے جو پاکستان کے لیے کسی 'بھوت بنگلے' سے کم نہیں ہے۔

آسٹریلیا کے جنوبی ساحلوں پر قائم ایڈیلیڈ کے شہر کے اس خوبصورت میدان پر ہی پاکستان نے عالمی کپ 2015ء میں اپنا پہلا مقابلہ کھیلا تھا، جہاں اسے روایتی حریف بھارت کے مقابلے میں بری طرح شکست ہوئی۔ لیکن یہ ہار ایک طویل سلسلے کی محض ایک کڑی تھی۔ پاکستان مجموعی طور پر ایڈیلیڈ اوول میں کل 16 ایک روزہ مقابلے کھیل چکا ہے اور ان میں سے صرف تین میں ہی اسے فتح نصیب ہوئی ہے اور 12 میں شکست کا منہ دیکھنا پڑا۔

پاکستان نے ایڈیلیڈ میں اپنا پہلا ایک روزہ مقابلہ دسمبر 1981ء میں ویسٹ انڈیز کے خلاف کھیلا تھا، جو انتہائی سنسنی خیز مقابلے کے بعد صرف 8 رنز سے پاکستان کی کامیابی پر منتج ہوا۔ پاکستان نے صرف 141 رنز کا بخوبی دفاع کیا اور صرف 47 رنز پر ویسٹ انڈیز کی آخری 7 وکٹیں گرا کر ایک شاندار کامیابی حاصل کی۔ لیکن اس کے بعد "چراغوں میں روشنی نہ رہی"، یہاں کھیلے گئے اگلے مسلسل پانچ میچز میں پاکستان کو مغلوب ہونا پڑا۔ کہیں فروری 1990ء میں جاکر یہ سلسلہ ٹوٹا جب پاکستان نے سری لنکا کو 27 رنز سے شکست دی۔

حتیٰ کہ 1992ء کے عالمی کپ میں بھی، کہ جسے پاکستان کی کرکٹ تاریخ کی معراج سمجھا جاتا ہے، قومی کرکٹ ٹیم نے ایڈیلیڈ میں بدترین کارکردگی دکھائی تھی۔ انگلستان کے خلاف ایک اہم گروپ میچ میں پوری ٹیم صرف 74 رنز پر ڈھیر ہوگئی تھی۔ اگر بارش رحمت بن کر نہ آتی تو پاکستان ایک اور شکست کھاتا اور شاید عالمی کپ سے ہی باہر ہوجاتا۔ بہرحال، اُس کے بعد سے اب تک پاکستان ایڈیلیڈ میں مزید 9 مقابلے کھیل چکا ہے اور صرف ایک بار، دسمبر 1996ء میں، اسے کامیابی ملی ہے، باقی حریف چاہے کوئی بھی ہو، ایڈیلیڈ پاکستان کی شکست کا ضامن رہا ہے۔

اس لیے پاکستان کو آئرلینڈ کے خلاف تاریخ کی دو دھاری تلوار کا سامنا ہے، 2007ء کے عالمی کپ کا داغ بھی دھونا ہے اور ایڈیلیڈ کی بدشگونی کا بھی خاتمہ کرنا ہے۔ اگر پاکستان اس میں کامیاب ہوا تب بھی، "ایک اور دریا کا سامنا" ہوگا، کیونکہ آئرلینڈ کے خلاف جیت کی صورت میں پاکستان کا کوارٹر فائنل آسٹریلیا سے ہوگا، کسی اور میدان پر نہیں بلکہ اسی "منحوس" ایڈیلیڈ اوول پر۔

ایڈیلیڈ اوول میں پاکستان کے ایک روزہ مقابلے

نتیجہ رنز بمقابلہ بمقام بتاریخ
 پاکستان فتح 140 ویسٹ انڈیز ایڈیلیڈ 5 دسمبر 1981ء
پاکستان شکست 170 آسٹریلیا ایڈیلیڈ 6 دسمبر 1981ء
پاکستان شکست 177 ویسٹ انڈیز ایڈیلیڈ 28 جنوری 1984ء
پاکستان شکست 140 آسٹریلیا ایڈیلیڈ 30 جنوری 1984ء
پاکستان شکست 180 ویسٹ انڈیز ایڈیلیڈ 10 دسمبر 1988ء
پاکستان شکست 177 آسٹریلیا ایڈیلیڈ 11 دسمبر 1988ء
پاکستان فتح 315 سری لنکا ایڈیلیڈ 17 فروری 1990ء
پاکستان بے نتیجہ 74 انگلستان ایڈیلیڈ یکم مارچ 1992ء
پاکستان شکست 173 ویسٹ انڈیز ایڈیلیڈ 12 دسمبر 1992ء
پاکستان شکست 195 آسٹریلیا ایڈیلیڈ 13 دسمبر 1992ء
پاکستان فتح 223 آسٹریلیا ایڈیلیڈ 15 دسمبر 1996ء
پاکستان شکست 176 ویسٹ انڈیز ایڈیلیڈ 17 دسمبر 1996ء
پاکستان شکست 219 بھارت ایڈیلیڈ 25 جنوری 2000ء
پاکستان شکست 281 ویسٹ انڈیز ایڈیلیڈ 28 جنوری 2005ء
پاکستان شکست 246 آسٹریلیا ایڈیلیڈ 26 جنوری 2010ء
پاکستان شکست 224 بھارت ایڈیلیڈ 15 فروری 2015ء

Facebook Comments