[ریکارڈز] عالمی کپ میں ہیٹ ٹرک کرنے والے گیندباز

جنوبی افریقہ نے جہاں سری لنکا کو شکست دے کر عالمی کپ کے کوارٹر فائنل میں تاریخی کامیابی حاصل کی، وہیں یہ مقابلہ ژاں-پال دومنی کے لیے بھی یادگار رہے گا۔ ایک جزوقتی گیندباز کے لیے ہیٹ ٹرک سے بڑا انعام بھلا کیا ہوسکتا ہے؟ وہ بھی اگر ایسے مقابلے میں مل جائے جسے جیتنا ملک کے لیے 'ناک' کا مسئلہ بن گیا ہو۔ جنوبی افریقہ نے تاریخ میں پہلی بار عالمی کپ میں کوئی ناک-آؤٹ مقابلہ جیتا اور اس جیت میں ایک اہم کردار رہے دومنی۔

جب پہلے بلے بازی کرنے والے سری لنکا کی اننگز تتر بتر ہوچکی تھی تو 33 ویں اوور کی آخری گیند پر دومنی نے سری لنکا کی امیدوں کے چراغ یعنی کپتان اینجلو میتھیوز کو آؤٹ کیا اور پھر اپنے اگلے اوور کی پہلی دو گیندوں پر نووان کولاسیکرا اور تھارنڈو کوشال کو آؤٹ کرکے سری لنکا کے پیروں تلے سے زمین کھینچ لی۔ وہ رواں عالمی کپ میں ہیٹ ٹرک کرنے والے دوسرے گیندباز تھے جبکہ ٹورنامنٹ کی تاریخ میں یہ کارنامہ انجام دینے والے مجموعی طور پر آٹھویں اور جنوبی افریقہ کے پہلے باؤلر۔

عالمی کپ میں پہلی ہیٹ ٹرک 1987ء میں بھارت کے چیتن شرما نے کی تھی جنہوں نے ناگپور میں نیوزی لینڈ کے خلاف یہ کارنامہ انجام دیا تھا۔ اس کے بعدپہلے تین عالمی کپوں کی طرح اگلے دو ٹورنامنٹس میں بھی کوئی گیندباز یہ شرف حاصل نہ کرسکا یہاں تک کہ پاکستان کےثقلین مشتاق نے 1999ء میں زمبابوے کے خلاف اہم مقابلے میں مسلسل تین گیندوں پر تین کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا۔

اس کے بعد سے اب تک کوئی عالمی کپ کسی ہیٹ ٹرک سےخالی نہیں گیا بلکہ 2003ء اور 2011ء میں تو دو، دو مرتبہ ایسا ہوا۔ بلکہ جاری عالمی کپ میں بھی یہ دوسری ہیٹ ٹرک تھی۔ انگلستان کے اسٹیون فن آسٹریلیا کے خلاف مقابلے میں پہلے ہی یہ کارنامہ انجام دے چکے ہیں۔

ذیل میں عالمی کپ میں ہونے والی تمام ہیٹ ٹرکس کی تفصیلات پیش کررہے ہیں، امید ہے کہ آپ کی معلومات میں اضافے کا باعث بنیں گی۔

ورلڈ کپ میں ہیٹ ٹرک کرنے والے گیندباز

گیندباز ملک آؤٹ ہونے والے بلے باز بمقابلہ بمقام بتاریخ
چیتن شرما بھارت کین ردرفرڈ - این اسمتھ - ایون چیٹ فیلڈ نیوزی لینڈ ناگ پور 31 اکتوبر 1987ء
ثقلین مشتاق پاکستان ہنری اولنگا- ایڈم ہکل - پومی ایم بانگوا زمبابوے اوول، لندن 11 جون 1999ء
چمندا واس سری لنکا حنان سرکار - محمد اشرفل - احسان الحق بنگلہ دیش پیٹر میرٹزبرگ 14 فروری 2003ء
بریٹ لی آسٹریلیا کینیڈی اوٹینو - بریجل پٹیل - ڈیوڈ اوبویا کینیا ڈربن 15 مارچ 2003ء
لاستھ مالنگا سری لنکا شان پولاک - اینڈریو ہال - ژاک کیلس - مکھایا این تینی جنوبی افریقہ گیانا 28 مارچ 2007ء
کیمار روچ ویسٹ انڈیز پیٹر سیلار - برنارڈس لوٹس - برینڈ ویسڈیک نیدرلینڈز دہلی 28 فروری 2011ء
لاستھ مالنگا سری لنکا تنمے مشرا - پیٹر اونگونڈو - شیم اینگوشے کینیا کولمبو یکم مارچ 2011ء
اسٹیون فن انگلستان بریڈ ہیڈن - گلین میکس ویل - مچل جانسن آسٹریلیا ملبورن 14 فروری 2015ء
ژاں-پال دومنی جنوبی افریقہ اینجلو میتھیوز - نووان کولاسیکرا - تھارنڈو کوشال سری لنکا سڈنی 18 مارچ 2015ء

Facebook Comments