نوعمر کوسال مینڈس کی آسٹریلیا کے خلاف یادگار اننگز

ایک ایسے مقابلے میں جہاں سری لنکا کی پہلی اننگز صرف 117 رنز پر تمام ہوئی ہو اور آسٹریلیا بھی 203 رنز سے آگے نہ بڑھ پایا ہو، وہ نصف سنچری ہی بہت بڑی بات سمجھی جا رہی تھی کہ نوجون کوسال مینڈس نے ایک جادوئی اننگز کھیل ڈالی جو ہو سکتا ہے کہ فیصلہ کن ثابت ہو۔

کوسال مینڈس چوتھے دن کا کھیل تاخیر سے شروع ہونے کے کچھ دیر بعد 176 رنز پر مچل اسٹارک کے ہاتھوں آؤٹ ہوگئے اور یوں 254 گیندوں پر مشتمل ایک شاندار اننگز اپنے اختتام کو پہنچی۔ مشکل وکٹ اور حالات میں انہوں نے لگ بھگ 70 کے اسٹرائیک ریٹ سے رنز بنائے اور ڈبل سنچری تک بھی پہنچ جاتے لیکن قسمت نے یاوری نہ کی۔

Kusal-Mendis

اس شاندار اننگز کے دوران کوسال نے آسٹریلیا کے خلاف 150 سے زیادہ رنز بنانے والے کم عمر ترین کھلاڑیوں میں اپنا مقام حاصل کیا ہے۔ یہ ریکارڈ جنوبی افریقہ کے گراہم پولاک کے پاس ہے جنہوں نے جنوری 1964ء میں صرف 19 سال اور 331 دن کی عمر میں ایڈیلیڈ اوول میں 175 رنز بنائے تھے۔ کوسال نے 21 سال اور 177 دن کی عمر میں یہ سنگ میل عبور کیا ہے اور یوں دوسرے نمبر پر ہیں۔ لیکن وہ آسٹریلیا کے خلاف سب سے کم عمر میں سنچری بنانے والے سری لنکا کے بیٹسمین ضرور بن گئے ہیں۔

آسٹریلیا کے خلاف 150 رنز سے زیادہ کی اننگز کھیلنے والے (بلحاظ عمر)

بلے باز رنز عمر بمقابلہ بمقام بتاریخ
گراہم پولاک 175 19 سال 331 دن آسٹریلیا ایڈیلیڈ جنوری 1964ء
کوسال مینڈس 176 21 سال 175 دن آسٹریلیا پالی کیلے جولائی 2016ء
سعید احمد 166 22 سال 51 دن آسٹریلیا لاہور نومبر 1959ء
لین ہٹن 364 22 سال 58 دن آسٹریلیا اوول اگست 1938ء
رچی رچرڈسن 154 22 سال 86 دن آسٹریلیا سینٹ جانز اپریل 1984ء
یہ بھی پڑھیں:  عالمی درجہ بندی: پاکستان کی تنزلی؛ کھلاڑیوں کی ترقی!

سری لنکا کی جانب سے آسٹریلیا کے خلاف سب سے کم عمر میں سنچری بنانے کا اعزاز وکٹ کیپر بیٹسمین رمیش کالووتھارنا کے پاس تھا کہ جنہوں نے 1992ء میں کولمبو ٹیسٹ میں ناقابل شکست 132 رنز بنائے تھے۔ تب ان کی عمر 22 سال اور 267 دن تھی۔

مینڈس کی اننگز آسٹریلیا کے خلاف ہوم گراؤنڈ بھی کسی بھی سری لنکن بلے باز کی طویل ترین باری بھی ہے۔ انہوں نے اگست 1992ء میں اسانکا گروسنہا کے 137 رنز کا ریکارڈ توڑا ہے۔

وہ آسٹریلیا کے خلاف کسی بھی مقام پر سری لنکا کے بلے باز کی طویل ترین اننگز کے ریکارڈ کے کافی قریب پہنچے لیکن توڑ نہ سکے۔ یہ ریکارڈ کمار سنگاکارا کے پاس ہے جو نومبر 2007ء میں ہوبارٹ ٹیسٹ میں 192 رنز تک پہنچے تھے اور امپائر کے ایک ناقص فیصلے کی وجہ سے ڈبل سنچری سے محروم رہ گئے۔

آسٹریلیا کے خلاف طویل ترین اننگز کھیلنے والے سری لنکن بلے باز

بلے باز رنز گیندیں چوکے چھکے بمقابلہ بمقام بتاریخ
کمار سنگاکارا 192 282 27 1 آسٹریلیا ہوبارٹ نومبر 2007ء
کوسال مینڈس 176 254 21 1 آسٹریلیا پالی کیلے جولائی 2016ء
ارونڈا ڈی سلوا 167 361 17 1 آسٹریلیا برسبین دسمبر 1989ء
تلکارتنے دلشان 147 273 21 آسٹریلیا ہوبارٹ دسمبر 2012ء
اسانکا گروسنہا 143 274 15 1 آسٹریلیا ملبورن دسمبر 1995ء

ایک ایسے مقابلے میں کہ جو لو-اسکورنگ ہے اور پہلی اننگز میں آسٹریلیا کی 86 رنز کی برتری کو بہت بڑا سمجھا جا رہا تھا، مینڈس کی 176 رنز کی اننگز بلاشبہ شاہکار سمجھی جانی چاہیے۔

Facebook Comments