پاکستان اسکاٹ لینڈ جائے گا

1 470

پاکستان کی یہ پرانی روایت رہی ہے کہ وہ نو آموز ٹیموں کو بین الاقوامی منظرنامے پر نمایاں کرنے کے لیے ان کی حوصلہ افزائی کرتا ہے اور ان کو بڑی ٹیموں کے خلاف کھیلنے کے مواقع دیتا رہتا ہے۔ چاہے معاملہ بنگلہ دیش کو ٹیسٹ درجہ دینے کے لیے اس کی حمایت کا ہو، یا افغانستان کی کرکٹ ٹیم کو کھیلنے کے لیے نیشنل کرکٹ اکیڈمی جیسی بین الاقوامی سہولیات کی حامل جگہ سے فائدہ اٹھانے کی اجازت دینا، پاکستان اس کی ایک طویل تاریخ رکھتا ہے۔ 2011ء میں جب پڑوسی انگلستان بھی آئرلینڈ سے کھیلنے کا خواہاں نظر نہ آتا تھا، پاکستان نے دورۂ ویسٹ انڈیز سے وطن واپس آتے ہوئے آئرلینڈ میں قیام کیا اور اس کے خلاف دو ایک روزہ مقابلے کھیلے۔ اس کےعلاوہ گزشتہ سال شارجہ میں افغانستان کے خلاف مقابلہ بھی اپنی نوعیت کا ایک تاریخی میچ تھا۔

پاکستان مئی میں اور آسٹریلیا ستمبر میں اسکاٹ لینڈ کے خلاف ایک روزہ میچز کھیلے گا (تصویر: ICC)
پاکستان مئی میں اور آسٹریلیا ستمبر میں اسکاٹ لینڈ کے خلاف ایک روزہ میچز کھیلے گا (تصویر: ICC)

کچھ اسی روایت کو برقرار رکھتے ہوئے پاکستان اس سال چیمپئنز ٹرافی کے لیے انگلستان جانے سے قبل اسکاٹ لینڈ میں قیام کرے گا اور اسکاٹش کرکٹ ٹیم کے خلاف دو ایک روزہ بین الاقوامی مقابلے کھیلے گا۔ یہ مقابلے 17 و 19 مئی کو اسکاٹ لینڈ کے دارالحکومت ایڈنبرا میں کھیلے جائیں گے۔

اسکاٹ لینڈ کے کپتان گورڈن ڈرمنڈ نے کہا کہ یہ مقابلے اسکاٹش کرکٹ کے لیے زبردست اہمیت اور حوصلہ افزائی کے حامل ہوں گے۔ ہمارے پاس 2013ء میں آئی سی سی کے دو عالمی ایونٹس کے لیے کوالیفائی کرنے کا موقع ہے، اور اب ہمارے پاس دو سرفہرست ٹیسٹ ممالک کے خلاف کھیلنے کی یقین دہانی بھی ہے کیونکہ پاکستان کے علاوہ رواں سال ستمبر میں آسٹریلیا بھی کھیلنے آ رہا ہے۔ یہ مقابلے موجودہ ٹیم کی پیشرفت کے لیے بہت اہمیت کےحامل ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ہماری نظریں اسکاٹ لینڈ میں ایک مرتبہ پھر پاکستانی ٹیم کے خیرمقدم پر مرکوز ہیں، اور یہ مقابلے یہاں مقیم پاکستانی اور اسکاٹش برادریوں کے درمیان تعلقات کو مزید مضبوط کریں گے۔

چیمپئنز ٹرافی کے سلسلے کا ساتواں و آخری ٹورنامنٹ رواں سال 6 سے 23 جون تک انگلستان میں کھیلا جائے گا۔