سری لنکن کھلاڑیوں کی تنخواہوں میں زبردست اضافہ

0 507

سری لنکن کرکٹ بورڈ کو گزشتہ سالوں کی نسبت 2017 میں ایک تہائی گنا زیادہ حاصل منافع حاصل ہوا ہے، جس پر بورڈ نے بڑے دل کا مظاہرہ کرتے ہوئے اس منافع میں کھلاڑیوں کو بھی شریک کر لیا ہے اور ان کی اجرتوں میں خاطرخواہ اضافہ کر دیا ہے۔

دلچسپ پہلو یہ ہے کہ گزشتہ سال سری لنکن ٹیم کی کاکردگی نہایت مایوس کن رہی تھی تاہم اس کے باوجود سنٹرل کنٹریکٹ شدہ 33 کھلاڑیوں کی چاندی ہو گئی ہے۔

بورڈ کی جاری کردہ رپورٹ کے مطابق گزشتہ مالی سال میں 2.12 ملین روپے (14ملین ڈالر) کا موثر منافع حاصل ہوا ہےجو کہ گزشتہ مالی سال کی نسبت 33 فیصد زائد ہے اس لئے کھلاڑیوں کی اجرتوں میں بھی اضافہ کر دیا گیا ہے جو کہ تقریبا 34 فیصد بنتا ہے۔

سرکاری ذرائع کے مطابق 2017 مالی سال میں حاصل ہونے والا یہ غیرمعمولی منافع بنگلہ دیش، انڈیا اور زمبابوے کے خلاف ہوم سیریز کی بدولت حاصل ہوا ہے، جس میں بڑا حصہ انڈیا کے دورے کے دوران نشریاتی حقوق میں شراکت داری سے ممکن ہوا ہے۔

تلخ حقیقت یہ ہے کہ یہ حاصل منافع سری لنکن بورڈ کے لئے 1996 کے عالمی کپ جیتنے کے بعد ایک بڑی خبر ہے ورنہ اس دوران ہر میدان میں حالت بدترین ہی رہی۔گزشتہ سال تو سری لنکا پر بہت بھاری گزرا انڈیا کے خلاف ہوم سیریز میں بدترین شکست کے علاوہ زمبابوے جیسی نچلے درجے کی ٹیم بھی ایک روزہ سیریز گھر میں آ کر ہرا گئی اور چیمپئن ٹرافی تو سری لنکا کے لئے ڈراونا خواب ثابت ہوا۔