اندوہناک خبر! شین وارن چل بسے

وارن کی عمر صرف 52 سال تھی

0 447

آسٹریلیا کے عظیم لیگ اسپن باؤلر شین وارن اچانک وفات پا گئے ہیں۔

'فوکس کرکٹ' نے اطلاع دی ہے کہ شبہ ہے کہ انہیں دل کا دورہ پڑا تھا۔

وارن کی عمر صرف 52 سال تھی اور آجکل تھائی لینڈ میں مقیم تھے۔

موت سے چند گھنٹے پہلے ہی انہوں نے سابق آسٹریلوی کھلاڑی روڈنی مارش کی وفات کی خبر پر ٹوئٹ کیا تھا۔ جس میں انہوں نے افسوس کا اظہار کرتے ہوئے انہیں خراج تحسین پیش کیا، اہل خانہ سے تعزیت کی اور ان کے لیے دعائیہ کلمات بھی ادا کیے تھے۔

لیکن کچھ گھنٹوں بعد وہ اپنی قیام گاہ میں بے سدھ پائے گئے اور طبّی عملے کی تمام تر کوشش کے باوجود جانبر نہ ہو سکے۔

تاریخ کے عظیم ترین اسپنرز میں شمار ہونے والے شین وارن ‏13 ستمبر 1969ء کو پیدا ہوئے تھے۔ انہوں نے 145 ٹیسٹ میچز کھیلے اور 708 وکٹیں حاصل کیں جو ٹیسٹ کرکٹ میں دوسری سب سے زیادہ وکٹیں ہیں۔ وہ ٹیسٹ کرکٹ میں 700 وکٹیں حاصل کرنے والے پہلے باؤلر تھے۔ اس کے علاوہ ان کے پاس ایک سال میں سب سے زیادہ 96 وکٹیں لینے کا ریکارڈ بھی ہے۔

وارن نے 1992ء سے 2007ء تک پھیلے اپنے انٹرنیشنل کیریئر میں مجموعی طور پر 1,001 وکٹیں حاصل کیں۔

لیگ اسپن کے فن کو دوبارہ زندہ کرنے کے جس عمل کا آغاز عبد القادر نے کیا تھا، اسے شین وارن نے عروج پر پہنچایا۔ 1993ء میں اپنے کیریئر کے اوائل میں انہوں نے اس گیند کے ذریعے شہرت پائی جو آج 'بال آف دی سنچری' کہلاتی ہے یعنی صدی کی بہترین گیند۔ ایک ناقابلِ یقین گیند پر مائیک گیٹنگ کا کلین بولڈ دنیا آج بھی نہیں بھولی۔

معروف جریدے 'وزڈن' نے انہیں پچھلی صدی کے پانچ بہترین کھلاڑیوں میں شمار کیا تھا۔

وارن ہمیشہ سرخیوں میں رہتے تھے۔ کبھی اپنی کارکردگی کی بدولت، کبھی فکسنگ کے الزامات کی وجہ سے، کبھی منشیات اور ممنوعہ ادویات کے استعمال پر تو کبھی اپنے ازدواجی معاملات کی وجہ سے۔ لیکن اس کا اندازہ کسی کو نہیں ہوگا کہ وارن کی موت کی خبر بھی اتنی ہی ہنگامہ خیز ہوگی۔

پاکستانی انہیں کبھی نہیں بھول سکتے کیونکہ انہی کی وجہ سے پاکستان 1999ء میں دوسری مرتبہ ورلڈ کپ نہیں جیت پایا تھا اور فائنل میں آسٹریلیا کے ہاتھوں شکست کھائی تھی۔