حسن علی کے جشن سے بھارت کو مسئلہ

0 891

واہگہ پر پاک-بھارت سرحد پر پرچم اتارنے کی تقریب تو روزانہ ہی ہوتی ہے لیکن گزشتہ روز یہ تقریب کچھ خاص تھی۔ پاکستان کے کئی معروف کھلاڑی تقریب میں شرکت کے لیے موجود تھے اور جوش و خروش تب عروج پر پہنچا جب حسن علی نے جشن منانے کے خاص انداز کے ذریعے سرحد کے دونوں طرف کے شائقین کو محظوظ کیا۔ لیکن لگتا ہے بھارت کو جشن کا یہ انداز بالکل نہیں بھایا کیونکہ بعد ازاں بھارتی کی بارڈر سکیورٹی فورس (بی ایس ایف) نے حسن علی کے خلاف شکایت درج کروانے کا ارادہ ظاہر کیا ہے کیونکہ ان کی "حرکات" نے "پیریڈ کے تقدس" کو پامال کیا۔

حسن علی کے مخصوص انداز کی وڈیو گزشتہ روز سے سوشل میڈیا پر کافی وائرل ہو چکی ہے۔ بھارت کا کہنا ہے کہ قواعد کے مطابق دونوں طرف صرف پاک رینجرز اور بی ایس ایف اہلکار ہی "پرفارم" کر سکتے ہیں، ان کے علاوہ کسی کو اجازت نہیں ہے لیکن ہفتے کی شام "ایک شہری" نے تقریب میں "مداخلت" کی۔ بی ایس ایف کے انسپکٹر جنرل پنجاب مکل گوئیل کا کہنا ہے کہ ان کی "حرکتوں" نے تقریب کے تقدس کو پامال کیا، جس پر وہ پاک رینجرز کو باضابطہ شکایت کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ کوئی بھی جارحانہ حرکت یا اشارہ کیا جا سکتا ہے لیکن اس کی جگہ تماشائیوں کے اسٹینڈز میں ہے، لیکن کوئی عام شخص پیریڈ کے دوران درمیان میں آ کر ایسا کچھ نہیں کر سکتا۔ بعد میں یا پہلے جو کرنا ہے کریں لیکن پیریڈ کے دوران نہیں۔

واضح رہے کہ گزشتہ سال چیمپینز ٹرافی کے فائنل سے قبل بھارتی مزاحیہ اداکار راجو شری واستو کی میزبانی میں عین واہگہ-اٹاری بارڈر پر ایک تقریب منعقد کی گئی تھی جس میں راجو نے اپنے روایتی گھٹیا مزاح سے تماشائیوں کو "محظوظ" کیا۔ وہ الگ بات کہ ان کی یہ حرکات کسی کام نہ آئیں اور پاکستان نے اگلے دن فائنل میں بھارت کو کچل کر رکھ دیا اور وہ اپنا سا منہ لے کر رہ گئے۔