[ریکارڈز] شے ہوپ نے ویوین رچرڈز کا ریکارڈ برابر کر دیا

0 201

‏93 میچز میں 52.28 کے اوسط سے 4026 رنز اور 20 نصف سنچریوں کے ساتھ 12 سنچریاں بھی، یہ شاندار ریکارڈ ہے ویسٹ انڈیز کے بلے باز شے ہوپ کا۔ جنہوں نے پاکستان کے خلاف پہلے ون ڈے میں ایک اہم سنگِ میل عبور کیا ہے۔ وہ ون ڈے انٹرنیشنل کرکٹ میں 4 ہزار رنز بنانے والے بیٹسمین بن چکے ہیں۔

شے ہوپ کا ون ڈے انٹرنیشنل کیریئر

میچزرنزبہترین اننگزاوسط10050
93402617052.281220

شاہین آفریدی، حسن علی، حارث رؤف اور شاداب خان پر مشتمل باؤلنگ اٹیک کے خلاف، وہ بھی ملتان کی گرمی میں، جہاں درجہ حرارت شام کے اوقات میں بھی 40 درجہ سینٹی گریڈ سے زیادہ تھا، شے ہوپ نے 134 گیندوں پر 127 رنز کی بہترین اننگز کھیلی۔ 15 چوکوں اور ایک چوکے سے مزیّن یہ اننگز ہی ویسٹ انڈیز کو 300 سے آگے لے جانے میں کامیاب ہوئی۔

ہوپ نے ایک چوکے کے ذریعے اپنی سنچری مکمل کی اور دلچسپ بات یہ ہے کہ یہی رنز انہیں 4 ہزار کے سنگِ میل تک بھی پہنچا گئے۔ انہوں نے یہ کارنامہ صرف 88 اننگز میں انجام دیا ہے یعنی ویسٹ انڈیز کے لیے سب سے کم اننگز میں 4 ہزار رنز کا ریکارڈ برابر کیا ہے۔

یہ قومی ریکارڈ عظیم بلے باز ویوین رچرڈز کے پاس ہے۔ انہوں نے بھی 4 ہزار رنز کا ہندسہ اپنی 88 ویں اننگز میں حاصل کیا تھا۔

اگر عالمی ریکارڈ دیکھیں تو جنوبی افریقہ کے ہاشم آملا سب سے اوپر ہیں۔ انہوں نے دسمبر 2013ء میں بھارت کے خلاف ایک ون ڈے کے دوران ایسی ہی ایک سنچری میں 4 ہزار رنز مکمل کیے تھے، صرف اور صرف 81 اننگز میں۔ انہوں یوں انہوں نے ویوین رچرڈز کا 28 سال پرانا ریکارڈ توڑ دیا اور ایسا توڑا کہ پاکستان کے بابر اعظم سر توڑ کوشش کے باوجود اس تک نہیں پہنچ پائے۔

ون ڈے انٹرنیشنل: کم ترین اننگز میں 4 ہزار رنز مکمل کرنے والے بلے باز

اننگزدورانیہبمقابلہبمقامبتاریخ
ہاشم آملا81‏5 سال 274 دن بھارتڈربن‏8 دسمبر 2013ء
بابر اعظم82‏6 سال 302 دن آسٹریلیالاہور‏29 مارچ 2022ء
ویوین رچرڈز88‏9 سال 311 دن نیوزی لینڈالبیون‏14 اپریل 1985ء
شے ہوپ88‏5 سال 206 دن پاکستانملتان‏9 جون 2022ء
جو روٹ91‏4 سال 261 دن ویسٹ انڈیزساؤتھمپٹن‏29 ستمبر 2017ء
ویراٹ کوہلی93‏4 سال 154 دن انگلینڈرانچی‏19 جنوری 2013ء
ڈیوڈ وارنر93‏8 سال 138 دن بنگلہ دیشاوول‏5 جون 2017ء
کوئنٹن ڈی کوک94‏5 سال 201 دن سری لنکاپالی کیلے‏8 اگست 2018ء
شیکھر دھاون95‏7 سال 58 دن سری لنکاوشاکھاپٹنم‏17 دسمبر 2017ء
گورڈن گرینج96‏12 سال 345 دن انگلینڈلیڈز‏21 مئی 1988ء
کین ولیم سن96‏6 سال 138 دن بنگلہ دیشکرائسٹ چرچ‏26 دسمبر 2016ء

بابر اعظم رواں سال اس ریکارڈ کے بہت، بہت قریب پہنچے۔ انہوں نے اپنے 4 ہزار ون ڈے انٹرنیشنل رنز مارچ 2022ء میں آسٹریلیا کے خلاف ایک ون ڈے انٹرنیشنل میں مکمل کیے تھے۔ یہ بابر کی 82 ویں اننگز تھی یعنی وہ محض ایک اننگز کے فرق سے عالمی ریکارڈ اپنے نام نہیں کر پائے۔

ویسے یہ فہرست دیکھیں تو اندازہ ہوتا ہے کہ شے ہوپ کا نام کتنے بڑے بلے بازوں میں شامل ہوا ہے۔ جو روٹ، ویراٹ کوہلی، ڈیوڈ وارنر اور کوئنٹن ڈی کوک، شیکھر دھاون، گورڈن گرینج اور کین ولیم سن، یہ سب وہ نام ہیں جنہوں نے 100 سے کم اننگز میں 4 ہزار رنز مکمل کیے۔