ٹیگ محفوظات

خصوصی تحریر

کرکٹ کے ماہر مبصرین، تجزیہ نگاروں اور سابق کھلاڑیوں کی خصوصی تحاریر، دلچسپ تجزیے و تبصرے اور مضامین پڑھنے کے لیے کرک نامہ ملاحظہ کریں

[آج کا دن] سعید انور اور وہ ڈبل سنچری جو بن نہ سکی

کرکٹ تاریخ میں جو افسانوی حیثیت سر ڈان بریڈمین کے 99.94 کے بیٹنگ اوسط کو حاصل ہے، شاید ہی کسی کو حاصل ہو۔ ڈان آخری اننگز میں صفر پر آؤٹ نہ ہوتے تو ان کا ٹیسٹ ایوریج یقیناً 100 تک پہنچ جاتا۔ لیکن کیا پھر اس ایوریج کو یہ افسانوی حیثیت حاصل

[ریکارڈز] اینجلو میتھیوز 199 پر آؤٹ

کوئی بیٹسمین اگر 90 رنز بنانے کے بعد سنچری سے پہلے پہلے آؤٹ ہو جائے تو کرکٹ میں کہتے ہیں یہ 'نروس نائنٹیز' کا شکار ہو گیا۔ لیکن کرکٹ تاریخ میں کچھ ایسے بد قسمت بیٹسمین بھی ہیں جو 190 رنز بنانے کے بعد ڈبل سنچری سے صرف ایک رن پہلے دھر لیے

اینڈریو سائمنڈز کی چند یادگار ترین اننگز

آسٹریلیا اور 1999ء کا ورلڈ کپ، اس بارے میں دیکھیں، سُنیں یا پڑھیں لگتا ہے یہ ایک دیومالائی داستان ہے۔ نیوزی لینڈ اور پاکستان کے ہاتھوں شکست کھانے کے بعد مسلسل کامیابیاں، یہاں تک کہ تاریخ کا عظیم ترین ون ڈے کھیلنے کے بعد فائنل تک رسائی۔ ہر

[آج کا دن] ون ڈے کرکٹ کا عظیم ترین فِنشر

اگر آپ نے 90ء کی دہائی میں کرکٹ دیکھنا شروع کی تھی تو 'فنشر' کا نام سنتے ہی آپ کے ذہن میں ایک ہی نام آتا ہوگا: مائیکل بیون! جب 2007ء میں بیون نے ریٹائرمنٹ کا اعلان کیا تھا تو وہ ون ڈے انٹرنیشنل میں واحد بلے باز تھے کہ جن کا اوسط 50 سے

پولارڈ کی چند یادگار ترین اننگز

ویسٹ انڈیز کے شعلہ فشاں بیٹسمین کیرون پولارڈ بھی بالآخر انٹرنیشنل کرکٹ چھوڑ گئے۔ 15 سالوں پر محیط بین الاقوامی کیریئر میں انہوں نے 123 ون ڈے اور 101 ٹی ٹوئنٹی انٹرنیشنل میچز کھیلے، جن میں کُل 4,275 رنز بنائے اور 97 انٹرنیشنل وکٹیں بھی حاصل

[آج کا دن] کانپور میں لالا کی طوفانی سنچری

شاہد آفریدی نے ون ڈے انٹرنیشنل کرکٹ میں اپنی پہلی ہی اننگز سے تہلکہ مچا دیا تھا۔ 37 گیندوں پر تاریخ کی تیز ترین سنچری بنائی اور سالوں تک کوئی بلے باز اس ریکارڈ کے قریب بھی نہیں پہنچ پایا۔ لیکن افسوس کی بات یہ تھی کہ یہ اننگز بہت کم لوگوں

[آج کا دن] محمد عامر، پاکستان کرکٹ کا فینکس

پاکستان میں کرکٹ دیکھنے والے کم عمر شائقین نے وسیم اکرم کو اپنے زمانے میں باؤلنگ کرواتے تو نہیں دیکھا ہوگا، لیکن کوئی غم نہیں کیونکہ انہوں نے محمد عامر کو ضرور دیکھا ہے۔ ایک ایسا باؤلر جسے دنیا 'نیا وسیم اکرم' کہتی تھی، جو صرف 17 سال کی

سیریز کا فیصلہ کن ون ڈے اور پاکستان کی تاریخ

اگر آپ دو دہائیوں سے پاکستان کرکٹ ٹیم کو کھیلتے ہوئے دیکھ رہے ہیں تو یہ بات ضرور جانتے ہوں گے کہ جب بھی پاکستان کوئی ون ڈے سیریز برابر کر دیتا ہے اور معاملہ آخری مقابلے تک پہنچ جاتا ہے تو اس کے نصیب میں شکست ہی آتی ہے۔ الّا ماشآ اللہ!

آج پاکستان کرکٹ تاریخ کا یادگار ترین دن

یقین نہیں آتا کہ اس یادگار دن کو آج 30 سال گزر گئے ہیں۔ یہ 1992ء میں 25 مارچ ہی کا دن تھا جب پاکستان نے پہلی بار ورلڈ کپ جیتا تھا۔ ایک ایسا کارنامہ جو پاکستان نہ پہلے کبھی انجام دے پایا اور نہ اس کے بعد کبھی کر سکا۔

کراچی میں نئی تاریخ، ریکارڈز کی نظر سے

کراچی کے نیشنل اسٹیڈیم پر آج ایک نئی تاریخ رقم ہونے جا رہی ہے۔ پاک-آسٹریلیا سیریز کا دوسرا ٹیسٹ چاہے کوئی بھی جیتے، بلکہ ڈرا بھی ہو جائے تو ایک تاریخی مقابلے کی حیثیت سے ریکارڈ بُک کی زینت بنے گا۔ آئیے ایک، ایک کر کے میچ کے تمام امکانات